For a better experience please change your browser to CHROME, FIREFOX, OPERA or Internet Explorer.

www.safelifetec.comImage result for SAFELIFE TEC

11-04-2019

نیپرا نے سولر انرجی کے لائسنس دینا شروع کر دیےImage result for solar power plant

کراچی:  نیپرا نے بجلی کی کمی کو پورا کرنے کے لیے بڑا اقدام اٹھاتے ہوئے سولر انرجی بنانے اور فروخت کرنے کے لیے لائسنس دینا شروع کر دیے ہیں۔

ذرائع کے مطابق اب صارفین گھریلو، صنعتوں یا کمرشل مقامات پر سولر پاور کے لائسنس لے سکتے ہیں اور نیٹ میٹرنگ کے تحت بجلی بنا کر استعمال اور فروخت بھی کر سکتے ہیں۔ نیٹ میٹرنگ کے تحت نیپرا اب تک سولر پاور کے 82 لائسنس جاری کر چکا ہے۔

لائسنس کے حصول کیلئے صارفین کو بجلی کی ترسیل کرنے والی کمپنیوں کو درخواست دینا پڑے گی۔ یہ کمپنیاں درخواست دینے والے صارفین کے گھر، دکان یا صنعت کا دورہ کر کے تحقیق کرینگی کہ کتنی سولر انرجی وہاں سے حاصل کی جا سکتی ہے؟ سب کچھ طے پا جانے کے بعد نیپرا لائسنس جاری کر دیگی۔

اگر سولر پینل سے ساڑھے سات سو یونٹ پیدا ہو رہے ہیں اور گھر کا استعمال 5 سو یونٹ ہے تو بقایا ڈھائی سو یونٹ بجلی ترسیل کرنے والی کمپنی آپ سے خرید لے گی

11-04-2019

منی بجٹ: بینک ٹرانزیکشنز پر ٹیکس ختم، سستے گھروں کیلئے قرض حسنہ اسکیم کا اعلانImage result for bank transaction pakistan

اسلام آباد: حکومت نے منی بجٹ میں بینک ٹرانزیکشنز پر فائلرز کے لیے ود ہولڈنگ ٹیکس ختم کرنے اور گھر بنانے کے لیے عوام کو قرض حسنہ فراہم کرنے کے لیے پانچ ارب روپے مختص کرنے کی تجاویز دی ہیں۔

وفاقی وزیر خزانہ اسد عمر نے قومی اسمبلی میں بجٹ تجاوز پیش کرتے ہوئے کہا کہ ٹیکس ریٹرنز فائل نہ کرنے والے افراد زیادہ ٹیکس دے کر 1300 سی سی تک گاڑی خرید سکیں گے۔

 

وفاقی وزیر خزانہ اسد عمر کی بجٹ تجاویز کے اہم نکات درج زیل ہیں

 

  • بینک چھوٹی کمپنی کو قرضہ دے گا تو 20فیصد ٹیکس ہوگا

  • زرعی قرضوں پر بھی ٹیکس 39فیصد سےکم کر کے 20فیصد پر لے کر آرہے ہیں

  • ایس ایم ای سیکٹر پر آمدن پر عائد ٹیکس 39 فیصد سے کم کرکے 20 فیصد کر رہے ہیں

  • 5 ارب روپے کا قرضے حسنہ کی اسکیم لا رہے ہیں

  • بینکنگ ٹرازنکشنز پر فائلرز کے لیے 0.3 فیصد ود ہولڈنگ ٹیکس ختم کیا جا رہا ہے

  • چھ ماہ میں زرعی قرضوں میں 22 فیصد اضافہ ہوا ہے

  • 5 ارب روپے کی قرضہ حسنہ اسکیم لا نے کا اعلان

  • نان فائلر زیادہ ٹیکس دے کر 1300 سی سی تک گاڑی لے سکے گا

  • چھوٹے شادی ہالوں پر عائد ٹیکس 20 ہزار سے کم کرکے 5 ہزار کرنے کا اعلان

  • نیوز پرنٹ پر امپورٹ ڈیوٹی پر مکمل استثنی کا اعلان کررہے ہیں

  • تمام نان بینکنگ کمپنیز کا سپر ٹیکس ختم کیا جا رہا ہے

  • ایک فیصد سالانہ کارپوریٹ انکم ٹیکس میں کمی ہوتی رہے گی

  • 1800 سی سی سے بڑی گاڑیوں پر ٹیکس کی شرح بڑھانے کا اعلان

 

موبائل فون کتنے مہنگے ہوئے؟

 

  • سستے موبائل فونز پر ٹیکس کم کیا جا رہا ہے، مہنگے پر نہیں

  • درآمدی موبائل اور سیٹلائٹ فون پر سیلز ٹیکس کی شرح میں اضافہ

  • 30 ڈالر سے کم قیمت کے موبائل پر سیلز ٹیکس 150 روپے ہو گا

  • 30 سے 100 ڈالر قیمت کے درآمدی موبائل پر 1470 روپے سیلز ٹیکس عائد

  • 100 سے 200 ڈالر قیمت کے درآمدی موبائل پر 1870 روپے سیلز ٹیکس عائد

  • 200 سے 350 ڈالر قیمت کے درآمدی موبائل پر 1930 روپے سیلز ٹیکس عائد

  • 350 سے 500 ڈالر قیمت کے درآمدی موبائل پر سیلز ٹیکس 6000 روپے سیلز ٹیکس عائد

  • 500 ڈالر سے زائد قیمت کے درآمدی موبائل پر 10300 روپے سیلز ٹیکس عائد

 

وزیر خزانہ اسد عمر نے کہا کہ میرے دائیں جانب والوں کے پاس پچھلے دس اور پانچ سال حکومت تھی، یہ عوام کے لیے کیا چھوڑ کر گئے؟ آج سے دو سال پہلے معاشی ماہرین نے خطرے کی نشاندہی کی، حکومت کو آگے الیکشن نظر آرہا تھا اس لیے انہوں نے بجائے اصلاح کے الیکشن خریدنے کی کوشش کی، انہوں نے اپنا بنایا بجٹ خسارہ ہی 900 ارب سے زیادہ بڑھادیا، اب وہ پیسہ کہاں سے آئے گا؟ کیا سوئس بینک سے آئے گا؟ اب وہ قرضہ عوام نے ادا کرنا ہے۔

اسد عمر نے (ن) لیگ کی حکومت پر شدید تنقید کرتے ہوئے کہا کہ بجلی کے نظام میں ایسی تباہی لائے کہ ملکی تاریخ میں ایسا کبھی نہیں ہوئی، ایک سال میں ساڑھے 400 ارب کا خسارہ ہوا، گیس کے نظام میں کبھی خسارہ نہیں ہوا انہوں نے وہ بڑھا کر ڈیڑھ سو ارب تک پہنچادیا، اسٹیل مل، پی آئی اے، ریلوے سب کا خسارہ اپنی جگہ ہے، یہ قوم کو ڈھائی سے تین ہزار ارب کا مقروض کرگئے۔

قومی اسمبلی میں اظہار خیال کرتے ہوئے وزیر خزانہ اسد عمر نے کہا کہ آج اہم کام کے لیے جمع ہوئے، عوام نے ووٹ دے کر اس اہم کام کے لیے بھیجا، ملک کے معاشی اور عوام مسائل دیکھیں، عوام مسائل کا ادراک رکھتی ہے، یہ بجٹ نہیں معیشت کی اصلاحات کرنے، سرمایہ کاری بڑھانے، صنعتی پیداوار بڑھانے کے لیے زراعت کو ترقی دینے کے لیے اصلاحات کا پیکج ہے۔

انہوں نے کہا کہ ہم نے ایک ایسی معیشت بنانی ہے جہاں آئی ایم ایف کا پروگرام پاکستان کی تاریخ کا آخری پروگرام ہو تاکہ عوام کو یہ نہ سننا پڑے کہ پچھلی حکومت کی وجہ سے آئی ایم ایف گئے۔

وزیر خزانہ کا کہنا تھاکہ ہمیں زراعت اور انڈسٹری کو اپنے پیروں پر کھڑا کرنا ہے، جب تک سرماریہ کاری نہیں ہوگی معیشت آگے نہیں بڑھ سکتی، کب تک بجٹ میں جعلی اعدادو شمار سے جعلی ترقی دکھانے کی کوشش کرتے رہیں گے، ہمیں حقیقی ترقی کے لیے سرمای کاری بڑھانی ہوگی۔

اسد عمر نے دعویٰ کیا کہ جب اگلا الیکشن آئے گا تو تحریک انصاف کی حکومت کو الیکشن خریدنے کی ضرورت نہیں پڑے گی، پانچ سال کی محنت کا رنگ نظر آرہا ہوگا، 2008 سے 2023 تک جو سب سے زیادہ تیز ترقی کی نمو ہوگی وہ 2022 اور 23 میں ہوگی، کرنٹ اکاؤنٹ اور مالی خسارہ کم ہوگا۔

انہوں نے شہبازشریف کو ہدفِ تنقید بناتے ہوئے کہا کہ ہم خود کو زبان سے خادم اعلیٰ نہیں بولتے، خادم سمجھتے ہیں، ہمیں یقین ہے عوام حقیقت دیکھ اور سمجھ رہی ہے، عوام نتائج پر ووٹ ڈالے گی، جنہوں نے الیکشن خریدنے کی کوشش کی عوام نے انہیں گھر بھیج دیا۔

اسد عمر کا کہنا تھا کہ امید ہے ہم جس طرح سرمایہ کاری، صنعت، تجارت اور زراعات کو آگے بڑھانے کی کوشش کررہے ہیں، امید ہے اس پر اپوزیشن ہماری رہنمائی کرے گی۔

انہوں نے مزید کہا کہ بینک درمیانی سطح کے لوگوں کو قرض دے گا، اس ٹیکس کو 39 فیصد سے کم کرکے 20 فیصد کررہے ہیں۔

 

سستے گھروں کیلئے قرض حسنہ اسکیم کا اعلان

 

وزیر خزانہ نے قرضہ حسنہ اسکیم کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ ہمیں غریبوں کے لیے گھر بنانے ہیں، وزیراعظم کا وعدہ ہے پچاس لاکھ گھر بنانے کی کوشش کریں گے، اس کے لیے دو کام کیے جارہے ہیں، بینک چھوٹے گھروں کے لیے جو قرض دیں گے اس پر ٹیکس 39 سے کم کرکے 20 فیصد کررہے ہیں، 5 ارب روپے کی قرضِ حسنہ کی اسکیم لارہے ہیں، ریوالونگ فنڈ پیدا کررہے ہیں، جو لوگ کم آمدنی کے لوگوں کے گھر بنانے پر کام کرتے ہیں انہیں قرض دیں گے تاکہ وہ غریبوں کے لیے گھر بناسکیں۔

انہوں نے کہا کہ ٹیکس کے ریونیو میں فوری طور پر کمی کے لیے تیار ہیں، ہم چاہتے ہیں معیشت آگے چلے، چاہتے ہیں لوگوں کو فائلر بننے کی ترغیب دی جائے، فائلر کی ٹرانزکشن پر ود ہولڈنگ ٹیکس ختم کررہے ہیں، ہم تاجروں پر ود ہولڈنگ کے 6 فیصد کو ایف بی آر میں لے جارہے ہیں اس کے بعد یہ کم سے کم ٹیکس نہیں رہےگا۔

وزیر خزانہ نے کہاکہ تاجر ہم سے مطالبہ کرتے رہے ہیں ہم ٹیکس دینے کو تیار ہیں لیکن ہمارے لیے آسان پیدا کریں، ہم ان کے لیے آسان اسکیم لارہے ہیں جسے اسلام آباد سے شروع کررہے ہیں، اس کی کامیابی کے بعد اسے پورے ملک میں لائیں گے، تاجروں کی یہ خواہش پوری کریں گے اس کے نتیجے میں پہلے کی نسبت زیادہ ٹیکس ملےگا۔

 

نان فائلر 1300 سی سی تک گاڑیاں خرید سکیں گے

 

اسد عمر نے اعلان کیا کہ نان فائلر پر 1300 سی سی تک گاڑیاں خریدنے کی بندش ختم کررہے ہیں، نان فائلر چھوٹی اور درمیانے سائز کی گاڑی لے سکتا ہے، ہم انہیں فائلر بنانا چاہتے ہیں، اس پر ٹیکس بڑھا رہے ہیں۔

 

چھوٹے شادی ہالوں پر ٹیکس 5 ہزار کرنے کا اعلان

 

انہوں نے شادی ہالوں پر بھی ٹیکس میں کمی کرنے کا اعلان کرتے ہوئے کہا چھوٹے شادی ہالوں پر ٹیکس 20 ہزار سے کم کرکے ایک چوتھائی یعنی 5 ہزار کررہے ہیں۔

 

نیوز پرنٹ کی امپورٹ کو ڈیوٹی فری کرنے کا اعلان

 

اسد عمر نے نیوز پرنٹ کی امپورٹ کو ڈیوٹی فری کرنے کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ نیوز پرنٹ انڈسٹری میں زیادہ تر خبریں تحریک انصاف کی حکومت کے حق میں نہیں ہوتی لیکن یہ حکومت اس بات پر یقین رکھتی ہے کہ اگر حقیقی جمہوریت چاہتے ہیں تو آپ کو ایک آزاد صحافت چاہیے اور ایسی انڈسٹری چاہیے جو منافع بخش ہو اور سب کا کاروبار بڑھائے۔

وزیر خزانہ کا کہنا تھاکہ صنعت کو اپنے پیروں پر کھڑا کرنا ہے، حکومت کا کام ہے اپنے کسان اور تاجر کے پیچھے کھڑی ہو، اسےمضبوط کرے کیونکہ دنیا سے تاجر، صنعت کار اور مزدور نے مقابلہ کرناہے، ہمارا کام ان کو برابری کا میدان دینا ہے، اس بجٹ میں تمام تر مشکلات کے باوجود خام مال پر کچھ میں مکمل ختم اور کچھ میں ڈیوٹی پر کمی کررہے ہیں، چھوٹی اور درمیانی سطح کا خصوصی خیال رکھا گیا ہے، آٹو کی وینڈر انڈسٹری کا خصوصی خیال رکھا گیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ کہ گزشتہ حکومت نے ایکسپوٹر کی کمر توڑ دی لیکن آج وہی ایکسپورٹر مضبوطی محسوس کررہا ہے۔

اسد عمر کا کہنا تھا کہ ہم نے اسپیشل اکنامک زونز بنائے ہیں اس میں سرمایہ کاری خصوصی توجہ ہے اور سی پیک اسپیشل دلچسپی ہے، اسپیشل اکنامک زون کے باہر بھی نئی سرمایہ کاری کو فروغ دینا چاہتے ہیں، سرمایہ کاری پر ٹیکس لگانا ظلم ہے، جو نئے پروجیکٹ لگیں گے ان کے پلانٹ اور مشینری پر مکمل کسٹم ڈیوٹی سیلز ٹیکس اور پانچ سال کے لیے انکم ٹیکس پر چھوٹ ہوگی۔

وزیر خزانہ نے مزید کہا کہ ہم مستقبل میں شمسی توانائی پر انحصار چاہتے ہیں، چاہتے ہیں سولر پینل بنیں ونڈ ٹربائن بنیں، ایسی تمام مینوفیکچرنگ کے لیے جو بھی آج سے پانچ سال تک سرمایہ کاری کرے گا اس میں کسٹم، سیلز ٹیکس اور انکم ٹیکس کا مکمل استثنیٰ ہوگا۔

 

نان بینکنگ کمپنیوں کا سوپر ٹیکس ختم

 

اسد عمر نے کہا کہ یکم جولائی سے نان بینکنگ کمپنیوں کا سوپر ٹیکس ختم کردیں گے۔

وزیر خزانہ کا کہنا تھا کہ اسٹاک ایکسچینج کو معیشت کا عکاس نہیں سمجھتا، (ن) لیگ کے دور میں مئی 2017 میں مارکیٹ 53 ہزار پر تھی اور دسمبر میں 17 ہزار پوائنٹس کم ہوکر 38 ہزار پر آگئی تو اس وقت کوئی خرابی نہیں تھی، جب ہماری حکومت میں 5 ہزار پوائنٹس کم ہوئی تو شور مچ گیا کہ معیشت ختم ہوگئی، پچھلے تین ہفتے میں انڈیکس میں 3 ہزار پوائنتس کا اضافہ ہوا ہے، اسٹاک ایکسچینج ملک میں سرمایہ کاری کے لیے اہم کردار دا کرسکتی ہے، اس لیے شیئرز کی لین دین پر پوائنٹ زیرو ٹو فیصد ود ہولڈنگ ٹیکس ختم کررہے ہیں،اس سے اگر آپ کا اس سال میں اگر کوئی نقصان ہوا تو اگلے تین سال تک آف سیٹ کرسکیں گے۔

 

پرامزری نوٹ کے ذریعے بینک سے کیش قرض مل سکے گا

 

انہوں نے کہاکہ ایکسپورٹرز کے ساتھ مشاورت سے اسکیم لے کر آرہے ہیں جو فروری کے وسط تک مل سکتی ہے، پرامزری نوٹ کے ذریعے بینک سے کیش قرض مل سکتا ہے، اس اقدام سے ایکسپورٹرز کا آخری مسئلہ بھی ختم ہوجائے گا۔

 

کسانوں کے لیے ڈیزل پر ڈیوٹی 17 فیصد سے کم کرکے 5 فیصد  کا اعلان

 

وزیر خزانہ نے اعلان کیا کہ کسانوں کی مدد کرنے کے لیے پیداواری یونٹ کو 4 ہزار سے بڑھا کر 6 ہزار یونٹ کررہے ہیں، کسانوں کے لیے ڈیزل پر ڈیوٹی 17 فیصد سے کم کرکے 5 فیصد تک کررہے ہیں، اس کے علاوہ سپریم کورٹ نے طبی چیزوں پر ڈیوٹی کم کرنے کا کہا تھا جس پر ڈیوٹیز کو کم کردیا ہے۔

ان کا کہنا تھا اس قوم نے خود انحصاری کا مشکل فیصلہ کیا ہے، اس سفر میں اگر آئی ایم ایف کی مدد لینا پڑی تو لیں گے لیکن کوشش کریں گے کہ عوام پر بوجھ نہ پڑے۔

 

اپوزیشن لیڈر شہبازشریف پر تنقید

 

آخر میں وزیر خزانہ نے اپوزیشن کے اتحاد پر اپوزیشن لیڈر شہبازشریف کو زبردست تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ اپوزیشن لیڈر نے جس طرح زرداری کو لاڑکانہ اور لاہور کی سڑکوں پر گھسیٹا ان کا شکریہ ادا کرتا ہوں۔

واضح رہے کہ اس سے قبل 21 جنوری کو منی بجٹ پیش کرنے کا پلان تھا، تاہم وزیراعظم عمران خان کے دورہ قطر کے سبب اس کی تاریخ آگے بڑھا دی گئی۔

11-04-2019

ہنڈا کی ٹینتھ جنریشن سوک پاکستان میں متعارف

لاہور:  ہنڈا اٹلس پاکستان نے نئی ٹینتھ جنریشن ہنڈا سوک 2019ء Image result for 10th generation honda civic 2019 in pakistanلانچ کر دی ہے جس کا صارفین شدت سے انتظار کر رہے تھے۔

 

ہنڈا سوِک سی سیگمنٹ میں سب سے زیادہ پسند کی جانے والی سیڈان بن چکی ہے جس کا ثبوت اس کے خریداروں کی بڑھتی ہوئی تعداد ہے۔ خاص طور پر ہنڈا سوِک 50 ہزار یونٹس کی فروخت کا ریکارڈ بنانے کے علاوہ کار آف دی ایئر 2017ء اور 2018ء کا ایوارڈ بھی جیت چکی ہے۔

ہنڈا اٹلس پاکستان لمیٹڈ کے پریذیڈنٹ اور سی ای او ہیرونوبو یوشی مورا نے کہا کہ ہنڈا سوِک 1994ء میں اپنی لانچ کے ساتھ ہی پاکستان میں ایک گھریلو نام بن گئی تھی۔

نئی ہنڈا سوِک 1.5RS ٹربو نے اپنے منفرد فیچرز اور جدید ڈیزائن کے ساتھ نئے معیار قائم کر دیے ہیں۔ 10ویں جنریش کی نئی سوِک آج سے ملک بھر میں قائم27 ہنڈا بااختیار 3S ڈیلرز پر ڈسپلے کی جا رہی ہے اور آج ہی سے اس کی بکنگ بھی شروع کر دی گئی ہے۔

05-04-2019

پنجاب حکومت اور چینی کمپنیوں کے مابین تعاون کا معاہدہRelated image

لاہور:  پنجاب حکومت اور چینی کمپنیوں کے مابین تعاون کا معاہدہ ہوا ہے جس کے تحت پنجاب میں 400 ایکڑ رقبے پر سپیشل اکنامک زون بنے گا۔

 ذرائع کے مطابق چینی کمپنیاں پنجاب میں گارمنٹس انڈسٹری لگائیں گی۔ شنگھائی یونائی انڈسٹری کمپنی اور پاک چائنا انویسٹمنٹ کمپنی کے مابین مفاہمتی یاداشت پر دستخط ہو گئے ہیں۔

چینی کمپنیوں کی جانب سے لگنے والی گارمنٹس انڈسٹری کیلئے کوئی چیز درآمد نہیں کی جائیگی۔ ہر چیز یہاں بنے گی اور گارمنٹس یہاں سے برآمد ہو گی۔ پنجاب میں چین کی مزید سرمایہ کاری بھی آئے گی۔

02-04-2019

وفاقی حکومت نے نئی ٹیکس ایمنسٹی اسکیم لانے کا اعلان کردیاRelated image

اسلام آباد: وفاقی وزیرخزانہ اسد عمر نے نئی ٹیکس ایمنسٹی اسکیم لانے کا اعلان کردیا۔ 

وفاقی دارالحکومت میں تقریب سے خطاب میں اسد عمر کا کہنا تھا کہ ملکی اور غیر ملکی اثاثوں کو ظاہر کرنے کیلئے ٹیکس ایمنسٹی لائی جائے گی جو کہ بجٹ سے پہلے پیش کی جائے گی۔

انہوں نے کہا کہ کاروباری برادری ٹیکس ایمنسٹی کا پر زور مطالبہ کررہی ہے اور ٹیکس ایمنسٹی اسکیم کے خدوخال تیار کیے جارہے ہیں۔

ان کا کہنا ہے کہ معیشت سے متعلق تمام فیصلے میں کررہا ہوں، پاکستان اسٹیل مل کی بحالی کا منصوبہ پیر کو ای سی سی اجلاس میں پیش کیا جائے گا۔

اسد عمر کا کہنا تھا کہ پی آئی اے کی بحالی کا مجوزہ منصوبہ مجھے دکھایا گیا لیکن میں نے پی آئی اے بحالی منصوبہ میں کچھ ترامیم تجویز کیں، نئے منصوبے کی تیاری میں کچھ وقت لگے گا۔

انہوں نے کہا کہ بجلی کی قیمتوں میں اضافے کا تعین نیپرا کرتا ہے اور اب بھی وہی کرے گا، آئندہ بجٹ میں نان فائلرز پر ود ہولڈنگ ٹیکس ختم کر دیں گے۔

پی ٹی آئی کے دو بڑوں کی لڑائی کے حوالے سے وفاقی وزیر خزانہ کا کہنا تھا کہ سپریم کورٹ نے جہانگیر ترین پر سرکاری عہدہ سنبھالنے پر پابندی لگائی ہے، ان کے سانس لینے پر پابندی نہیں لگائی۔

انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم کابینہ اجلاس میں کسی کو بھی بلاسکتے ہیں اور جہانگیر ترین بھی وزیر اعظم کی اجازت سے کابینہ اجلاس میں بیٹھے، سرکاری فیصلے بند کمروں میں نہیں ہوتے۔

یاد رہے کہ گزشتہ دنوں وفاقی وزیر خزانہ اسد عمر نے ٹیکس ایمنسٹی اسکیم لانے کا امکان مسترد کیا تھا جب کہ مسلم لیگ (ن) کے دور حکومت میں وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے ٹیکس ایمنسٹی اسکیم متعارف کرائی تھی جس کی تحریک انصاف اور پیپلزپارٹی نے سخت مخالفت کی تھی۔

 
 

01-04-2019

انکم ٹیکس گوشوارے جمع کرانے کی تاریخ میں 30 اپریل تک توسیعRelated image

اسلام آباد: فیڈرل بورڈ آف ریونیو ( ایف بی آر) نے انکم ٹیکس ریٹرن جمع کرانے کی تاریخ میں ایک مرتبہ پھر توسیع کردی جس کے بعد اب نان فائلرز 30 اپریل تک ٹیکس ریٹرن جمع کراسکتے ہیں۔

ٹیکس گوشوارے جمع کرانے کی آج آخری تاریخ تھی تاہم ایف بی آر نے چوتھی مرتبہ گوشوارے جمع کرانے کی تاریخ میں توسیع کی۔

ایف بی آر کے مطابق تمام ٹیکس دہندگان انکم ٹیکس گوشوارے 30 اپریل تک جمع کرا سکتے ہیں، گوشوارے جمع کرانے والوں کی تعداد 15 لاکھ سے زیادہ ہوگئی ہے۔

 
 

29-03-2019

ایف بی آر نے نان فائلرز کے 25 ہزار سے زائد رقم نکلوانے پر ٹیکس لگنے کی تردید کردیRelated image

اسلام آباد: فیڈرل بورڈ آف ریونیو (ایف بی آر) نے نان فائلرز کے 25 ہزار روپے سے زائد کیش نکلوانے پر ود ہولڈنگ ٹیکس عائد ہونے کی تردید کردی ہے۔

ایف بی آر کی جانب سے جاری وضاحتی بیان میں 25 ہزار سے زائد کیش نکلوانے پر ود ہولڈنگ ٹیکس یا اس کی حد میں رد وبدل کی تردید کی گئی ہے۔

ایف بی آر کے مطابق اِنکم ٹیکس آرڈیننس میں سیکشن اے 231 اور 231 اے اے میں کوئی تبدیلی نہیں ہوئی، 50 ہزار سے زائد کیش نکالنے پر نان فائلر 0.6 فیصد ود ہولڈنگ ٹیکس ادا کرے گا جب کہ نان فائلر پر 25 ہزار سے زائد کا ڈیمانڈ ڈرافٹ بنوانے پر 0.6 فیصد ود ہولڈنگ ٹیکس عائد ہوگا۔

ایف بی آر کا کہنا ہےکہ فائلر کے لیے بینکنگ ٹرانزیکشن پر ود ہولڈنگ ٹیکس ختم کردیا گیا ہے اس لیے بینکنگ سسٹم میں ٹرانزیکشن پر ود ہولڈنگ کا اطلاق صرف نان فائلر پر ہوگا۔

واضح رہے کہ گزشتہ چند روز سے سوشل میڈیا پر وائرل ہونے والے ایک نوٹی فکیشن میں اس بات کی نشاندہی کی گئی تھی کہ حکومت نے نئے مالیاتی ترمیمی بل میں نان فائلرز یعنی ٹیکس گوشوارے جمع نہ کرانے والوں کے 25 ہزار سے زائد کیش نکالنے پر 0.6 فیصد ٹیکس عائد کیا ہے تاہم وزیر مملکت برائے ریونیو حماد اظہر بھی گزشتہ روز اپنے ٹوئٹر پر اس کی تردید کرچکے ہیں۔

 

28-03-2019

چھوٹے تاجروں کے لیے فکسڈ ٹیکس پراجیکٹ تیاریRelated image

اسلام آباد: (دنیا نیوز) وزیر مملکت برائے محصولات حماد اظہر نے کہا ہے کہ نئی ٹیکس ایمنسٹی سکیم لانے کا ابھی کوئی فیصلہ نہیں ہوا تاہم تاجروں کی طرف سے ایمنسٹی سکیم کیلئے تجاویز موصول ہوئی ہیں۔

اسلام آباد میں تاجروں کے کنونشن کے بعد میڈیا سے غیر رسمی بات چیت میں ان کا کہنا تھا کہ ٹیکس نادہندگان سے ساڑھے تیرہ ارب روپے کی ریکوری ہوئی ہے۔ یہ ریکوری نجی شعبے سے کی گئی ہے۔

اس سے پہلے اسلام آباد میں تاجر کنونشن سے وزیر مملکت محصولات حماد اظہر نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اسلام آباد کے چھوٹے تاجروں کے لیے فکسڈ ٹیکس کا پراجیکٹ تیار ہو رہا ہے جو دو ہفتے میں مکمل ہو جائے گا۔ پراجیکٹ کامیاب ہوا تو دو ماہ میں ملک کے دیگر شہروں میں بھی چھوٹے تاجروں کے لیے فکسڈ ٹیکس سکیم لائیں گے۔

ان کا کہنا تھا کہ فکسڈ ٹیکس سے چھوٹے تاجروں کا ہراساں کرنے کا شکوہ ختم ہو جائے گا۔ سابقہ حکومت نے 19 ارب ڈالر کا کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ چھوڑا اور خزانہ خالی کر گئے۔ سابقہ حکومت نے 10 ارب ڈالر کے قرضے فوری ادا کرنے کے لیے چھوڑے اور اس پر ستم یہ کہ ایسا بجٹ دیا کہ ٹیکس آمدن بھی نہ چھوڑی۔

27-03-2019

بینکوں سے رقم نکالنے پر ٹیکس میں کوئی تبدیلی نہیں کی گئی اور 25 ہزار روپے نکلوانے پر ٹیکس کی خبروں میں صداقت نہیں ہے۔Image result for pak rupees

اسلام آباد:  وزیر مملکت برائے محصولات حماد اظہر نے کہا ہے کہ بینکوں سے رقم نکالنے پر ٹیکس میں کوئی تبدیلی نہیں کی گئی اور 25 ہزار روپے نکلوانے پر ٹیکس کی خبروں میں صداقت نہیں ہے۔

وزیر مملکت برائے محصولات حماد اظہر نے اپنے ٹویٹ میں کہا ہے کہ سوشل میڈیا پر بینکوں سے 25 ہزار نکلوانے پر ٹیکس کی خبریں بے بنیاد ہیں۔ پاکستان تحریک انصاف کی حکومت نے ضمنی مالیاتی ترمیمی بل میں ٹیکس فائلر پر ٹیکس ختم کیا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ نان فائلرز کے لیے بینکوں سے ایک دن میں 50 ہزار روپے نکلوانے پر صفر اعشاریہ چھ فیصد ٹیکس عائد ہے اور اس میں کوئی تبدیلی نہیں کی گئی۔ بینکوں سے 25 ہزار نکلوانے پر ٹیکس کی خبروں میں صداقت نہیں ہے۔

Image result for dubai business

 

25-03-2019

وزیراعظم عمران خان نے ملک کی پہلی قومی ٹیرف پالیسی کی منظوری دے دی

Related imageاسلام آباد: وزیراعظم عمران خان نے ملک کی پہلی قومی ٹیرف پالیسی کی اصولی منظوری دے دی، پالیسی کا مقصد ٹیرف نظام کے پورے ڈھانچے میں شفافیت، پیشگوئی کو یقینی بنانا اور اسے ادارہ جاتی شکل دینا ہے۔

وزیراعظم کی زیر صدارت اجلاس میں سیکرٹری تجارت محمد یونس ڈھاگہ نے پالیسی کے نمایاں خدوخال پر روشنی ڈالتے ہوئے کہا کہ فریقین کے ساتھ تفصیلی اور جامع بات چیت کے بعد وضع کردہ قومی ٹیرف پالیسی کا بنیادی مقصد خام مال تک رسائی کے ذریعے مسابقت کو بہتر بنانا، شفاف انداز میں سرمایہ کاری راغب کرتے ہوئے روزگار کے مواقع میں اضافہ کرنا، قابل پیشگوئی ٹیرف نظام وضع کرنا اور ٹیرف ڈھانچے میں خامیوں کو دور کرنا ہے۔انہوں نے کہا کہ اس کا مقصد پالیسی اصولوں میں تجارتی پالیسی دستاویز کی حیثیت سے ٹیرف سمیت استثنات و رعایتوں میں کمی، کسی پروڈکٹ کی پراسیسنگ کے مرحلے کے ساتھ مناسب ٹیرف ڈھانچہ وضع کرنا، ملکی صنعت کا تحفظ یقینی بنانا اور مسابقانہ درآمدی متبادل شامل ہیں۔

سیکریٹری تجارت نے بتایا کہ نئی پالیسی وزارت تجارت میں وسیع البنیاد ٹیرف پالیسی سینٹر کے قیام کی حامل ہے جو قومی ٹیرف پالیسی کے مقاصد کی روشنی میں بہتر ٹیرف ڈھانچہ کیلئے تجاویز وضع کرے گا۔

وزیراعظم نے ملک کی تاریخ میں پہلی مرتبہ جامع ٹیرف پالیسی مرتب کرنے پر وزارت تجارت کی کاوشوں کو سراہتے ہوئے کہا کہ شفافیت، پیشگوئی اور ٹیرف کے تعین کیلئے ادارہ جاتی ڈھانچہ کی فراہمی سے کاروباری برادری کا اعتماد بحال ہو گا۔

وزیراعظم نے کہا کہ معیشت بالخصوص تجارت اور صنعتی ترقی کو ماضی میں ایڈہاک ازم اور ٹیرف ڈھانچے کی پیشگوئی نہ ہونے کی وجہ سے بہت نقصان پہنچا جس کے نتیجے میں مفاد پرست عناصر اور بڑے پیمانے پر بدعنوانی نے معیشت کو جکڑ لیا۔

 

23-03-2019

Related image

ملک میں بے نامی اکاؤنٹس ایکٹ 2019 نافذ کردیا گیا جس کا اطلاق فوری طور پر ہوگا۔

فیڈرل بورڈ آف ریوینیو (ایف بی آر) کی جانب سے جاری نوٹیفکیشن کے مطابق بے نامی اکاؤنٹس رکھنے والوں کو ٹیکس نوٹس جاری کیے جاسکیں گے، جواب نہ ملنے پر رقم فوری ضبط ہوجائے گی، اس وقت بے نامی اکاؤنٹس میں 50 ارب روپے کی موجودگی کی معلومات ایف بی آر کے پاس ہیں۔

یکٹ کے نفاذ کے بعد ایف بی آر کو بے نامی اکاؤنٹس میں موجود رقم ضبط کرنے کا اختیار مل گیا ہے، ایف بی آر ذرائع کے مطابق بے نامی اکاؤنٹس پر ایک ہفتے کے دوران نوٹسز بھجوا دیے جائیں گے۔

ایف بی آر نوٹیفکیشن کے مطابق بے نامی ایکٹ کے تحت کارروائی کے لیے ٹریبونل قائم کردیے گئے ہیں، 20 لاکھ سے 50 لاکھ روپے کے درمیان بے نامی اکاؤنٹس کی نشاندہی پر4 فیصد کے علاوہ ایک لاکھ روپے ملیں گے۔

ذرائع کے مطابق 50 لاکھ روپے سے زیادہ کی بے نامی اکاؤنٹس کی نشاندہی پرمالیت کا 3 فیصد اور 2 لاکھ 20 ہزار روپے ملیں گے۔

بے نامی اکاؤنٹس پر ایک ہفتے کے دوران نوٹسز بھجوا دیے جائیں گے، ایف بی آرایکٹ کا اطلاق بے نامی بینک اکاؤنٹس، بےنامی منقولہ اورغیرمنقولہ جائیداد پرہوگا۔

ذرائع کے مطابق وزیراعظم عمران خان نے دو ہفتے پہلے ایکٹ کو نافذ کرنے کا حکم دیا تھا۔

20-03-2019

انکم ٹیکس گوشوارے جمع کرانے کی تاریخ میں 31 مارچ تک توسیعRelated image

اسلام آباد: ایف بی آر نے انکم ٹیکس گوشوارے جمع کرانےکی تاریخ میں توسیع کردی۔

فیڈرل بورڈ آف ریونیو (ایف بی آر) کے مطابق ٹیکس ریٹرن فائل کرنےکی آخری تاریخ 31 مارچ مقرر کی گئی ہے اور مقررہ تاریخ تک گوشوارے جمع کرائے جاسکتے ہیں۔

ایف بی آر کا کہنا ہےکہ کمپنیز اور ایسوسی ایشن آف پرسنز کے لیے بھی تاریخ بڑھائی گئی ہے۔

اس سے قبل ٹیکس ریٹرن فائل کرنے کی آخری تاریخ 15 دسمبر تھی جس میں دوسری مرتبہ توسیع کی گئی ہے۔

 

19-03-2019 Image result for drone

پنجاب ریونیو اتھارٹی نے ٹیکس چوری روکنے کیلیے ڈرون ٹیکنالوجی کا استعمال شروع کردیا۔

پی آر اے کے مطابق ’’ بلیو اسکائی تھنکنگ‘‘کے تحت رئیل اسٹیٹ، وئر ہائوسز،کنسٹرکشن سیکٹر اور شادی ہالز کی مانیٹرنگ کیلئے ڈرون ٹیکنالوجی کا استعمال کیا جائیگا۔اس ٹیکنالوجی سے ایریل میپنگ کی جائیگی جس سے تقریبات کے شرکا کی صحیح تعداد معلوم ہوسکتی ہے،اسی طرح پراپرٹی کا ایریا اور اس پر تعمیراتی کام کا جائزہ لیا جاسکتا ہے۔

اس حوالے سے پنجاب ریونیو اتھارٹی کے چیئرمین جاوید احمد نے ’’ایکسپریس‘‘ کو انٹرویو دیتے ہوئے بتایا کہ اس کا آئیڈیا سابق چیئرمین ڈاکٹر راحیل صدیقی اور میرا تھا،ایسا سافٹ ویئر بنایا گیا ہے کہ جس سے ڈرون کے ذریعے ہم تقریب کے شرکا کی درست تعداد معلوم کرسکتے ہیں اور یہ کام چند منٹ میں ہوجاتا ہے۔

چیئرمین پی آر اے نے کہا کہ ویئر ہاوسزمیں رکھے گئے ہزاروں کنٹینرز کو ڈرون ٹیکنالوجی سے مانیٹر کرکے 42 ویئر ہاوسز اور کیرج کمپنیوں کو نوٹسز بھیجے گئے اور کوئی بھی اپنے ویئر ہاوس کی وسعت اور گنجائش کے حوالے سے انکار نہ کرسکا کیونکہ ڈرون کی ویڈیو کا ثبوت ناقابل تردید ہے۔

اسی طرح کنسٹرکشن سیکٹر میں ڈرون کی ایریل میپنگ سے ہمیں تعمیراتی منصوبے کی صورتحال کا بہتر اندازہ ہوجاتا ہے ، پنجاب ریونیواتھارٹی کو مکمل طور پر ڈیجیٹل ادارہ بنایا جائے گا اورجس کیلیے جون 2020کی ڈیڈ لائن رکھی گئی ہے، اب تک ہم پی آراے کو 80فیصدتک ڈیجیٹلائزڈ کرچکے ہیں، ضلعی نیٹ ورک کو آئندہ سال تک مکمل کرلیں گے، 28فروری 2019تک ہم نے61ارب روپے کا ریونیواکٹھا کیا۔

18-03-2019

وزیراعلیٰ پنجاب کا سرکاری ٹھیکوں کیلئے ’ای ٹینڈرنگ‘ سسٹم کا فیصلہImage result for e-tendering punjab

لاہور: حکومت پنجاب نے سرکاری ٹھیکوں میں شفافیت اور بدعنوانی کے خاتمے کے لیے ’ای ٹینڈرنگ‘ سسٹم متعارف کرنے کا فیصلہ کرلیا۔

وزیر اعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے سرکاری ٹھیکوں میں ‘ای ٹینڈرنگ’ سسٹم کے فیصلے کی منظوری دے دی  جس کا اطلاق نئے مالی سال سے ہوگا۔

وزیراعلیٰ پنجاب کا کہنا ہے کہ ’ای ٹینڈرنگ‘ سسٹم نافذ کرنے کا مقصد سرکاری ٹھیکوں میں شفافیت اور بدعنوانی کا خاتمہ کرنا ہے اور اس نظام کا سرکاری محکموں میں جلد عمل درآمد کرایا جائے گا۔

وزیر اعلی پنجاب کا مزید کہنا ہے کہ سرکاری محکموں میں ای ٹینڈرنگ سسٹم مرحلہ وار پروگرام کے تحت نافذ کیا جائے گا جب کہ نئے مالی سال سے تمام محکمے مکمل طور پر ‘ای ٹینڈرنگ’ سسٹم کے تحت ٹھیکے دینے کے پابند ہوں گے۔

 

18-03-2019

ٹیکس نادہندگان کیخلاف گھیرا تنگ ہوتا جائیگا، حماد اظہرImage result for tax pakistan

وزیر مملکت برائے ریونیو حماد اظہر نے کہا ہے کہ ٹیکس نہ دینے والوں کے خلاف گھیرا تنگ ہوتا جائے گا،لاہور میں بڑی، بڑی مارکٹیں ہیں جہاں کوئی ایک روپیہ بھی ٹیکس نہیں دیتا۔

لاہور چیمبر میں گفتگو کرتے ہوئے حماد اظہر نے امید ظاہر کی کہ صنعتی تنظیمیں ٹیکس نیٹ بڑھانے میں حکومت کی مدد کریں گی۔

انہوں نے کہا کہ حکومت تاجروں کو ہراساں کرنے کے خلاف ہے، صنعتکاروں کے تحفظات کو سمجھتے ہیں ،عام آدمی پر ٹیکسوں کا بڑا بوجھ ہے، ٹیکس پالیسی کو ٹیکس ایڈمنسٹریشن سے الگ کیا ہے،ٹیکس نیٹ کو بڑھانے کے لئے اقدامات کر رہے ہیں ۔

حماداظہر کا کہنا ہے کہ صاحب حیثیت لوگوں کی پروفائلنگ کی جارہی ہے، معیشت کو دستاویزی شکل دینے کا وقت آگیا ہے، اب حقائق چھپانے سے کام نہیں چلے گا، یہ نیا نظام اپریل تک فعال ہوجائے گا۔

وزیرمملکت نے تاجروں سے اپیل ہے کہ وہ رضا کارانہ طورپر ٹیکس نیٹ میں آئیں، اُن سے سابق معاملات کی پوچھ گچھ نہیں کریں گے۔

Image result for safety items
Top